عکس خوشبو ہوں بکھرنے سے نہ روکے کوئی

پروین شاکر

عکس خوشبو ہوں بکھرنے سے نہ روکے کوئی

پروین شاکر

MORE BY پروین شاکر

    عکس خوشبو ہوں بکھرنے سے نہ روکے کوئی

    اور بکھر جاؤں تو مجھ کو نہ سمیٹے کوئی

    کانپ اٹھتی ہوں میں یہ سوچ کے تنہائی میں

    میرے چہرے پہ ترا نام نہ پڑھ لے کوئی

    جس طرح خواب مرے ہو گئے ریزہ ریزہ

    اس طرح سے نہ کبھی ٹوٹ کے بکھرے کوئی

    میں تو اس دن سے ہراساں ہوں کہ جب حکم ملے

    خشک پھولوں کو کتابوں میں نہ رکھے کوئی

    اب تو اس راہ سے وہ شخص گزرتا بھی نہیں

    اب کس امید پہ دروازے سے جھانکے کوئی

    کوئی آہٹ کوئی آواز کوئی چاپ نہیں

    دل کی گلیاں بڑی سنسان ہیں آئے کوئی

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    سادھنا سرگم

    سادھنا سرگم

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites