بات کرنی مجھے مشکل کبھی ایسی تو نہ تھی

بہادر شاہ ظفر

بات کرنی مجھے مشکل کبھی ایسی تو نہ تھی

بہادر شاہ ظفر

MORE BYبہادر شاہ ظفر

    بات کرنی مجھے مشکل کبھی ایسی تو نہ تھی

    جیسی اب ہے تری محفل کبھی ایسی تو نہ تھی

    لے گیا چھین کے کون آج ترا صبر و قرار

    بے قراری تجھے اے دل کبھی ایسی تو نہ تھی

    اس کی آنکھوں نے خدا جانے کیا کیا جادو

    کہ طبیعت مری مائل کبھی ایسی تو نہ تھی

    عکس رخسار نے کس کے ہے تجھے چمکایا

    تاب تجھ میں مہ کامل کبھی ایسی تو نہ تھی

    اب کی جو راہ محبت میں اٹھائی تکلیف

    سخت ہوتی ہمیں منزل کبھی ایسی تو نہ تھی

    پائے کوباں کوئی زنداں میں نیا ہے مجنوں

    آتی آواز سلاسل کبھی ایسی تو نہ تھی

    نگہ یار کو اب کیوں ہے تغافل اے دل

    وہ ترے حال سے غافل کبھی ایسی تو نہ تھی

    چشم قاتل مری دشمن تھی ہمیشہ لیکن

    جیسی اب ہو گئی قاتل کبھی ایسی تو نہ تھی

    کیا سبب تو جو بگڑتا ہے ظفرؔ سے ہر بار

    خو تری حور شمائل کبھی ایسی تو نہ تھی

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    ایم کلیم

    ایم کلیم

    بھارتی وشواناتھن

    بھارتی وشواناتھن

    نامعلوم

    نامعلوم

    گایتری اشوکن

    گایتری اشوکن

    رنا لیلیٰ

    رنا لیلیٰ

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    بات کرنی مجھے مشکل کبھی ایسی تو نہ تھی نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY