دیکھا جو آئینہ تو مجھے سوچنا پڑا

فراغ روہوی

دیکھا جو آئینہ تو مجھے سوچنا پڑا

فراغ روہوی

MORE BY فراغ روہوی

    دیکھا جو آئینہ تو مجھے سوچنا پڑا

    خود سے نہ مل سکا تو مجھے سوچنا پڑا

    اس کا جو خط ملا تو مجھے سوچنا پڑا

    اپنا سا وہ لگا تو مجھے سوچنا پڑا

    مجھ کو تھا یہ گماں کہ مجھی میں ہے اک انا

    دیکھی تری انا تو مجھے سوچنا پڑا

    دنیا سمجھ رہی تھی کہ ناراض مجھ سے ہے

    لیکن وہ جب ملا تو مجھے سوچنا پڑا

    سر کو چھپاؤں اپنے کہ پیروں کو ڈھانپ لوں

    چھوٹی سی تھی ردا تو مجھے سوچنا پڑا

    اک دن وہ میرے عیب گنانے لگا فراغؔ

    جب خود ہی تھک گیا تو مجھے سوچنا پڑا

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    جگجیت سنگھ

    جگجیت سنگھ

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY