دل چرا کر نظر چرائی ہے

داغؔ دہلوی

دل چرا کر نظر چرائی ہے

داغؔ دہلوی

MORE BYداغؔ دہلوی

    دل چرا کر نظر چرائی ہے

    لٹ گئے لٹ گئے دہائی ہے

    ایک دن مل کے پھر نہیں ملتے

    کس قیامت کی یہ جدائی ہے

    اے اثر کر نہ انتظار دعا

    مانگنا سخت بے حیائی ہے

    میں یہاں ہوں وہاں ہے دل میرا

    نارسائی عجب رسائی ہے

    اس طرح اہل ناز ناز کریں

    بندگی ہے کہ یہ خدائی ہے

    پانی پی پی کے توبہ کرتا ہوں

    پارسائی سی پارسائی ہے

    وعدہ کرنے کا اختیار رہا

    بات کرنے میں کیا برائی ہے

    کب نکلتا ہے اب جگر سے تیر

    یہ بھی کیا تیری آشنائی ہے

    داغؔ ان سے دماغ کرتے ہیں

    نہیں معلوم کیا سمائی ہے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    مہران امروہی

    مہران امروہی

    نامعلوم

    نامعلوم

    RECITATIONS

    فصیح اکمل

    فصیح اکمل,

    جاوید نسیم

    جاوید نسیم,

    فصیح اکمل

    دل چرا کر نظر چرائی ہے فصیح اکمل

    جاوید نسیم

    دل چرا کر نظر چرائی ہے جاوید نسیم

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے