دل شوریدہ کی وحشت نہیں دیکھی جاتی

اختر سعید خان

دل شوریدہ کی وحشت نہیں دیکھی جاتی

اختر سعید خان

MORE BY اختر سعید خان

    دل شوریدہ کی وحشت نہیں دیکھی جاتی

    روز اک سر پہ قیامت نہیں دیکھی جاتی

    اب ان آنکھوں میں وہ اگلی سی ندامت بھی نہیں

    اب دل زار کی حالت نہیں دیکھی جاتی

    بند کر دے کوئی ماضی کا دریچہ مجھ پر

    اب اس آئینے میں صورت نہیں دیکھی جاتی

    آپ کی رنجش بے جا ہی بہت ہے مجھ کو

    دل پہ ہر تازہ مصیبت نہیں دیکھی جاتی

    تو کہانی ہی کے پردے میں بھلی لگتی ہے

    زندگی تیری حقیقت نہیں دیکھی جاتی

    لفظ اس شوخ کا منہ دیکھ کے رہ جاتے ہیں

    لب اظہار کی حسرت نہیں دیکھی جاتی

    دشمن جاں ہی سہی ساتھ تو اک عمر کا ہے

    دل سے اب درد کی رخصت نہیں دیکھی جاتی

    دیکھا جاتا ہے یہاں حوصلۂ قطع سفر

    نفس چند کی مہلت نہیں دیکھی جاتی

    دیکھیے جب بھی مژہ پر ہے اک آنسو اخترؔ

    دیدۂ تر کی رفاقت نہیں دیکھی جاتی

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    دل شوریدہ کی وحشت نہیں دیکھی جاتی نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY