دوئی کا تذکرہ توحید میں پایا نہیں جاتا

مخمور دہلوی

دوئی کا تذکرہ توحید میں پایا نہیں جاتا

مخمور دہلوی

MORE BY مخمور دہلوی

    دوئی کا تذکرہ توحید میں پایا نہیں جاتا

    جہاں میری رسائی ہے مرا سایا نہیں جاتا

    مرے ٹوٹے ہوئے پائے طلب کا مجھ پہ احساں ہے

    تمہارے در سے اٹھ کر اب کہیں جایا نہیں جاتا

    محبت ہو تو جاتی ہے محبت کی نہیں جاتی

    یہ شعلہ خود بھڑک اٹھتا ہے بھڑکایا نہیں جاتا

    فقیری میں بھی مجھ کو مانگنے سے شرم آتی ہے

    سوالی ہو کے مجھ سے ہاتھ پھیلاتا نہیں جاتا

    چمن تم سے عبارت ہے بہاریں تم سے زندہ ہیں

    تمہارے سامنے پھولوں سے مرجھایا نہیں جاتا

    محبت کے لیے کچھ خاص دل مخصوص ہوتے ہیں

    یہ وہ نغمہ ہے جو ہر ساز پر گایا نہیں جاتا

    محبت اصل میں مخمورؔ وہ راز حقیقت ہے

    سمجھ میں آ گیا ہے پھر بھی سمجھایا نہیں جاتا

    RECITATIONS

    فہد حسین

    فہد حسین

    فہد حسین

    دوئی کا تذکرہ توحید میں پایا نہیں جاتا فہد حسین

    مآخذ:

    • کتاب : Aazadi ke baad dehli men urdu gazal (Pg. 327)
    • Author : Professor Unwan Chishti
    • مطبع : Asila Offset Printers, Kalan Mahal, Dariyaganj, New Delhi-6 (1989)
    • اشاعت : 1989

    Tagged Under

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY