گرجا میں مندروں میں اذانوں میں بٹ گیا

ندا فاضلی

گرجا میں مندروں میں اذانوں میں بٹ گیا

ندا فاضلی

MORE BY ندا فاضلی

    گرجا میں مندروں میں اذانوں میں بٹ گیا

    ہوتے ہی صبح آدمی خانوں میں بٹ گیا

    اک عشق نام کا جو پرندہ خلا میں تھا

    اترا جو شہر میں تو دکانوں میں بٹ گیا

    پہلے تلاشا کھیت پھر دریا کی کھوج کی

    باقی کا وقت گیہوں کے دانوں میں بٹ گیا

    جب تک تھا آسمان میں سورج سبھی کا تھا

    پھر یوں ہوا وہ چند مکانوں میں بٹ گیا

    ہیں تاک میں شکاری نشانہ ہیں بستیاں

    عالم تمام چند مچانوں میں بٹ گیا

    خبروں نے کی مصوری خبریں غزل بنیں

    زندہ لہو تو تیر کمانوں میں بٹ گیا

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    نامعلوم

    نامعلوم

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    گرجا میں مندروں میں اذانوں میں بٹ گیا نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY