ہماری سیر کو گلشن سے کوئے یار بہتر تھا

شیخ ظہور الدین حاتم

ہماری سیر کو گلشن سے کوئے یار بہتر تھا

شیخ ظہور الدین حاتم

MORE BYشیخ ظہور الدین حاتم

    ہماری سیر کو گلشن سے کوئے یار بہتر تھا

    نفیر بلبلوں سے نالہ ہائے زار بہتر تھا

    انا الحق کی حقیقت کو جو ہو منصور سو جانے

    کہ اوس کو آسماں چڑھنے سے چڑھنا دار بہتر تھا

    کبھو بیمار سن کر وہ عیادت کو تو آتا تھا

    ہمیں اپنے بھلے ہونے سے وہ آزار بہتر تھا

    تو اپنے من کا منکا پھیر زاہد ورنہ کیا حاصل

    تجھے اس مکر کی تسبیح سے زنار بہتر تھا

    نہ کہتا میں کہ عاشق ہوں ترا تو کیوں وہ رم کرتا

    مجھے اقرار اب کرنے سے وہ انکار بہتر تھا

    ہماری عقل میں گھر کی گرفتاری سے حاتمؔ کو

    کہو دیوانہ پھرنا کوچہ و بازار بہتر تھا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY