حرص دولت کی نہ عز و جاہ کی

آسی غازی پوری

حرص دولت کی نہ عز و جاہ کی

آسی غازی پوری

MORE BY آسی غازی پوری

    حرص دولت کی نہ عز و جاہ کی

    بس تمنا ہے دل آگاہ کی

    درد دل کتنا پسند آیا اسے

    میں نے جب کی آہ اس نے واہ کی

    کھنچ گئے کنعاں سے یوسف مصر کو

    پوچھئے حضرت سے قوت چاہ کی

    بس سلوک اس کا ہے منزل اس کی ہے

    اس کے دل تک جس نے اپنی راہ کی

    واعظو کیسا بتوں کا گھورنا

    کچھ خبر ہے ثم وجہ اللٰہ کی

    یاد آئی طاق بیت اللہ میں

    بیت ابرو اس بت دل خواہ کی

    راہ حق کی ہے اگر آسیؔ تلاش

    خاک رہ ہو مرد حق آگاہ کی

    RECITATIONS

    فصیح اکمل

    فصیح اکمل

    فصیح اکمل

    حرص دولت کی نہ عز و جاہ کی فصیح اکمل

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites