aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

ہونٹوں پہ ساحلوں کی طرح تشنگی رہی

شکیل اختر

ہونٹوں پہ ساحلوں کی طرح تشنگی رہی

شکیل اختر

MORE BYشکیل اختر

    ہونٹوں پہ ساحلوں کی طرح تشنگی رہی

    میں چپ ہوا تو میری انا چیختی رہی

    اک نام کیا لکھا ترا ساحل کی ریت پر

    پھر عمر بھر ہوا سے مری دشمنی رہی

    سڑکوں پہ سرد رات رہی میری ہم سفر

    آنکھوں میں میرے ساتھ تھکن جاگتی رہی

    یادوں سے کھیلتی رہی تنہائی رات بھر

    خوشبو کے انتظار میں شب بھیگتی رہی

    وہ لفظ لفظ مجھے پہ اترتا رہا شکیلؔ

    سوچوں پہ اس کے نام کی تختی لگی رہی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے