جب بھی ہنسی کی گرد میں چہرہ چھپا لیا

اسلم کولسری

جب بھی ہنسی کی گرد میں چہرہ چھپا لیا

اسلم کولسری

MORE BYاسلم کولسری

    جب بھی ہنسی کی گرد میں چہرہ چھپا لیا

    بے لوث دوستی کا بڑا ہی مزا لیا

    اک لمحۂ سکوں تو ملا تھا نصیب سے

    لیکن کسی شریر صدی نے چرا لیا

    کانٹے سے بھی نچوڑ لی غیروں نے بوئے گل

    یاروں نے بوئے گل سے بھی کانٹا بنا لیا

    اسلمؔ بڑے وقار سے ڈگری وصول کی

    اور اس کے بعد شہر میں خوانچہ لگا لیا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY