جب بھی خلوت میں وہ یاد آئے گا

احسان دانش

جب بھی خلوت میں وہ یاد آئے گا

احسان دانش

MORE BYاحسان دانش

    جب بھی خلوت میں وہ یاد آئے گا

    وقت کا سیل ٹھہر جائے گا

    چاند تم دیکھ رہے ہو جس کو

    یہ بھی آنسو سا ڈھلک جائے گا

    ایک دو موڑ ہی مڑ کر انساں

    بام گردوں کی خبر لائے گا

    میں نے دیکھے ہیں چمن بے پردہ

    کوئی گل کیا مرے منہ آئے گا

    حسن سے دور ہی رہنا بہتر

    جو ملے گا وہی پچھتائے گا

    اور کچھ دیر ستارو ٹھہرو

    اس کا وعدہ ہے ضرور آئے گا

    ان کی زلفوں کی مہک لے دانشؔ

    اس دھندلکے کو کہاں پائے گا

    مأخذ :
    • کتاب : Karwaan-e-Ghazal (Pg. 107)
    • Author : Farooq Argali
    • مطبع : Farid Book Depot (Pvt.) Ltd (2004)
    • اشاعت : 2004

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY