جب بھی یہ دل اداس ہوتا ہے

گلزار

جب بھی یہ دل اداس ہوتا ہے

گلزار

MORE BY گلزار

    جب بھی یہ دل اداس ہوتا ہے

    جانے کون آس پاس ہوتا ہے

    آنکھیں پہچانتی ہیں آنکھوں کو

    درد چہرہ شناس ہوتا ہے

    گو برستی نہیں سدا آنکھیں

    ابر تو بارہ ماس ہوتا ہے

    چھال پیڑوں کی سخت ہے لیکن

    نیچے ناخن کے ماس ہوتا ہے

    زخم کہتے ہیں دل کا گہنہ ہے

    درد دل کا لباس ہوتا ہے

    ڈس ہی لیتا ہے سب کو عشق کبھی

    سانپ موقع شناس ہوتا ہے

    صرف اتنا کرم کیا کیجے

    آپ کو جتنا راس ہوتا ہے

    مآخذ:

    • کتاب : Chand Pukhraj Ka (Pg. 174)
    • Author : Gulzar
    • مطبع : Roopa And Company (1995)
    • اشاعت : 1995

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY