جب کبھی ان کی توجہ میں کمی پائی گئی

ساحر لدھیانوی

جب کبھی ان کی توجہ میں کمی پائی گئی

ساحر لدھیانوی

MORE BY ساحر لدھیانوی

    جب کبھی ان کی توجہ میں کمی پائی گئی

    از سر نو داستان شوق دہرائی گئی

    بک گئے جب تیرے لب پھر تجھ کو کیا شکوہ اگر

    زندگانی بادہ و ساغر سے بہلائی گئی

    اے غم دنیا تجھے کیا علم تیرے واسطے

    کن بہانوں سے طبیعت راہ پر لائی گئی

    ہم کریں ترک وفا اچھا چلو یوں ہی سہی

    اور اگر ترک وفا سے بھی نہ رسوائی گئی

    کیسے کیسے چشم و عارض گرد غم سے بجھ گئے

    کیسے کیسے پیکروں کی شان زیبائی گئی

    دل کی دھڑکن میں توازن آ چلا ہے خیر ہو

    میری نظریں بجھ گئیں یا تیری رعنائی گئی

    ان کا غم ان کا تصور ان کے شکوے اب کہاں

    اب تو یہ باتیں بھی اے دل ہو گئیں آئی گئی

    جرأت انساں پہ گو تادیب کے پہرے رہے

    فطرت انساں کو کب زنجیر پہنائی گئی

    عرصۂ ہستی میں اب تیشہ زنوں کا دور ہے

    رسم چنگیزی اٹھی توقیر دارائی گئی

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    محمد رفیع

    محمد رفیع

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    جب کبھی ان کی توجہ میں کمی پائی گئی نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY