جو دیکھے تھے جادو ترے ہات کے

منیر نیازی

جو دیکھے تھے جادو ترے ہات کے

منیر نیازی

MORE BY منیر نیازی

    جو دیکھے تھے جادو ترے ہات کے

    ہیں چرچے ابھی تک اسی بات کے

    گھٹا دیکھ کر خوش ہوئیں لڑکیاں

    چھتوں پر کھلے پھول برسات کے

    مجھے درد دل کا وہاں لے گیا

    جہاں در کھلے تھے طلسمات کے

    ہوا جب چلی پھڑپھڑا کر اڑے

    پرندے پرانے محلات کے

    نہ تو ہے کہیں اور نہ میں ہوں کہیں

    یہ سب سلسلے ہیں خیالات کے

    منیرؔ آ رہی ہے گھڑی وصل کی

    زمانے گئے ہجر کی رات کے

    مآخذ:

    • کتاب : kulliyat-e-muniir niyaazii (Pg. 233)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY