جستجو کھوئے ہوؤں کی عمر بھر کرتے رہے

پروین شاکر

جستجو کھوئے ہوؤں کی عمر بھر کرتے رہے

پروین شاکر

MORE BY پروین شاکر

    جستجو کھوئے ہوؤں کی عمر بھر کرتے رہے

    چاند کے ہم راہ ہم ہر شب سفر کرتے رہے

    راستوں کا علم تھا ہم کو نہ سمتوں کی خبر

    شہر نامعلوم کی چاہت مگر کرتے رہے

    ہم نے خود سے بھی چھپایا اور سارے شہر کو

    تیرے جانے کی خبر دیوار و در کرتے رہے

    وہ نہ آئے گا ہمیں معلوم تھا اس شام بھی

    انتظار اس کا مگر کچھ سوچ کر کرتے رہے

    آج آیا ہے ہمیں بھی ان اڑانوں کا خیال

    جن کو تیرے زعم میں بے بال و پر کرتے رہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites