کبھی یوں بھی آ مری آنکھ میں کہ مری نظر کو خبر نہ ہو

بشیر بدر

کبھی یوں بھی آ مری آنکھ میں کہ مری نظر کو خبر نہ ہو

بشیر بدر

MORE BYبشیر بدر

    کبھی یوں بھی آ مری آنکھ میں کہ مری نظر کو خبر نہ ہو

    مجھے ایک رات نواز دے مگر اس کے بعد سحر نہ ہو

    وہ بڑا رحیم و کریم ہے مجھے یہ صفت بھی عطا کرے

    تجھے بھولنے کی دعا کروں تو مری دعا میں اثر نہ ہو

    مرے بازوؤں میں تھکی تھکی ابھی محو خواب ہے چاندنی

    نہ اٹھے ستاروں کی پالکی ابھی آہٹوں کا گزر نہ ہو

    یہ غزل کہ جیسے ہرن کی آنکھ میں پچھلی رات کی چاندنی

    نہ بجھے خرابے کی روشنی کبھی بے چراغ یہ گھر نہ ہو

    کبھی دن کی دھوپ میں جھوم کے کبھی شب کے پھول کو چوم کے

    یوں ہی ساتھ ساتھ چلیں سدا کبھی ختم اپنا سفر نہ ہو

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    جگجیت سنگھ

    جگجیت سنگھ

    RECITATIONS

    فہد حسین

    فہد حسین

    فہد حسین

    کبھی یوں بھی آ مری آنکھ میں کہ مری نظر کو خبر نہ ہو فہد حسین

    موضوعات:

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY