کون خواہش کرے کہ اور جیے

فاطمہ حسن

کون خواہش کرے کہ اور جیے

فاطمہ حسن

MORE BY فاطمہ حسن

    کون خواہش کرے کہ اور جیے

    ایک بیزار زندگی کے لیے

    اور کوئی نہیں ہے اس کے سوا

    سکھ دیے دکھ دیے اسی نے دیے

    آؤ ہونٹوں پہ لفظ رکھ لیں ہم

    ایک مدت ہوئی ہے بات کیے

    زخم کو راس آ گئی ہے ہوا

    اب مسیحا اسے سیے نہ سیے

    اس کے پیالے میں زہر ہے کہ شراب

    کیسے معلوم ہو بغیر پیے

    اب تھکن درد بنتی جاتی ہے

    دل سے کچھ کام بھی تو ایسے لیے

    میں نے ماں کا لباس جب پہنا

    مجھ کو تتلی نے اپنے رنگ دیے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    فاطمہ حسن

    فاطمہ حسن

    RECITATIONS

    فاطمہ حسن

    فاطمہ حسن

    فاطمہ حسن

    کون خواہش کرے کہ اور جیے فاطمہ حسن

    مآخذ:

    • کتاب : yadain bhi ab khwab hoin (Pg. 88)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY