خامشی اچھی نہیں انکار ہونا چاہئے

ظفر اقبال

خامشی اچھی نہیں انکار ہونا چاہئے

ظفر اقبال

MORE BY ظفر اقبال

    خامشی اچھی نہیں انکار ہونا چاہئے

    یہ تماشا اب سر بازار ہونا چاہئے

    خواب کی تعبیر پر اصرار ہے جن کو ابھی

    پہلے ان کو خواب سے بیدار ہونا چاہئے

    ڈوب کر مرنا بھی اسلوب محبت ہو تو ہو

    وہ جو دریا ہے تو اس کو پار ہونا چاہئے

    اب وہی کرنے لگے دیدار سے آگے کی بات

    جو کبھی کہتے تھے بس دیدار ہونا چاہئے

    بات پوری ہے ادھوری چاہئے اے جان جاں

    کام آساں ہے اسے دشوار ہونا چاہئے

    دوستی کے نام پر کیجے نہ کیونکر دشمنی

    کچھ نہ کچھ آخر طریق کار ہونا چاہئے

    جھوٹ بولا ہے تو قائم بھی رہو اس پر ظفرؔ

    آدمی کو صاحب کردار ہونا چاہئے

    RECITATIONS

    ظفر اقبال

    ظفر اقبال

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    ظفر اقبال

    خامشی اچھی نہیں انکار ہونا چاہئے ظفر اقبال

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY