خانہ ساز اجالا مار

فرحت احساس

خانہ ساز اجالا مار

فرحت احساس

MORE BYفرحت احساس

    خانہ ساز اجالا مار

    چاند پہ اپنا بھالا مار

    نور کا دریا پھوٹ پڑے

    ہجر کا ایسا نالہ مار

    راستہ پانی مانگتا ہے

    اپنے پاؤں کا چھالا مار

    خاص کو رنگ عام دکھا

    ادنائی سے آلا مار

    چھوڑ یہ ذلت دشت کو چل

    شہر کے گھر کو تالا مار

    روح بھی سر ہو جائے گی

    پہلے بدن کا پالا مار

    دیر نہ کر فرحتؔ احساس

    مار سفید پہ کالا مار

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY