رونق بیش و کم کس کے ہونے سے ہے

اطہر نفیس

رونق بیش و کم کس کے ہونے سے ہے

اطہر نفیس

MORE BYاطہر نفیس

    رونق بیش و کم کس کے ہونے سے ہے

    موسم خشک و نم کس کے ہونے سے ہے

    کس کا چہرا بناتی ہیں یہ ساعتیں

    وقت کا زیر و بم کس کے ہونے سے ہے

    کون گزرا کہ بنتے گئے راستے

    راہ کا پیچ و خم کس کے ہونے سے ہے

    کس کی خاطر دریچوں سے آئی ہوا

    یہ فضا یوں بہم کس کے ہونے سے ہے

    شاخ در شاخ پتوں کی یہ زندگی

    آج بھی محترم کس کے ہونے سے ہے

    موت برحق ہے کس کے نہ ہونے سے آج

    زندگی دم بہ دم کس کے ہونے سے ہے

    کس کی زلفوں کا اعجاز ہے بوئے گل

    یہ ہواؤں میں نم کس کے ہونے سے ہے

    صبح شادابئ جاں کا کیوں ہے ملال

    عشرت شام غم کس کے ہونے سے ہے

    وحشت دل کو کس نے سنبھالا دیا

    یہ جنوں کم سے کم کس کے ہونے سے ہے

    کس سے منسوب ہے ہر جفا ہر وفا

    یہ ستم یہ کرم کس کے ہونے سے ہے

    موضوعات:

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY