کھلی وہ زلف تو پہلی حسین رات ہوئی

عبد الحمید عدم

کھلی وہ زلف تو پہلی حسین رات ہوئی

عبد الحمید عدم

MORE BYعبد الحمید عدم

    کھلی وہ زلف تو پہلی حسین رات ہوئی

    اٹھی وہ آنکھ تو تخلیق کائنات ہوئی

    خدا نے گڑھ تو دیا عالم وجود مگر

    سجاوٹوں کی بنا عورتوں کی ذات ہوئی

    گلے بہت تھے مگر جب نظر نظر سے ملی!

    نہ مجھ سے بات ہوئی اور نہ ان سے بات ہوئی

    دل تباہ کو کچھ اور کر گئی زخمی!

    وہ اک نگاہ جو لبریز التفات ہوئی

    حیات و موت کی غارتگری کا حال نہ پوچھ

    جو موت نہ بن سکی وہ عدمؔ حیات ہوئی

    مآخذ :
    • کتاب : Kulliyat-e-Adm (Pg. 1010)
    • Author : Khwaja Mohammad Zakariya
    • مطبع : Alhamd Publications, Lahore (2009)
    • اشاعت : 2009

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY