کسی پہ کرنا نہیں اعتبار میری طرح

فرید پربتی

کسی پہ کرنا نہیں اعتبار میری طرح

فرید پربتی

MORE BYفرید پربتی

    کسی پہ کرنا نہیں اعتبار میری طرح

    لٹا کے بیٹھوگے صبر و قرار میری طرح

    ابھی تو ہوتی ہیں سرگوشیاں پس دیوار

    ابھی نہ کرنا ستارے شمار میری طرح

    بگولہ بن کے اڑا خواہشوں کے صحرا میں

    ٹھہر گیا تو فقط تھا غبار میری طرح

    انہیں کے سایوں میں اب سر جھکا کے چلتا ہے

    اگا گیا تھا جو سرو و خیار میری طرح

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY