کوئی سوال نہ کر اور کوئی جواب نہ پوچھ

خوشبیر سنگھ شادؔ

کوئی سوال نہ کر اور کوئی جواب نہ پوچھ

خوشبیر سنگھ شادؔ

MORE BY خوشبیر سنگھ شادؔ

    کوئی سوال نہ کر اور کوئی جواب نہ پوچھ

    تو مجھ سے عہد گذشتہ کا اب حساب نہ پوچھ

    سفینے کتنے ہوئے اس میں غرق آب نہ پوچھ

    تو میرے دل کے سمندر کا اضطراب نہ پوچھ

    میں کب سے نیند کا مارا ہوا ہوں اور کب سے

    یہ میری جاگتی آنکھیں ہیں محو خواب نہ پوچھ

    سفر میں دھوپ کی شدت نے بھی ستایا مگر

    فریب دیتے رہے کس قدر سراب نہ پوچھ

    کبھی عروج پہ تھا خود پہ اعتماد مرا

    غروب کیسے ہوا ہے یہ آفتاب نہ پوچھ

    مآخذ:

    • Book : Zara ye Dhoop Dhal Jaye (Pg. 43)
    • Author : Khushbir Singh Shaad
    • مطبع : Suman Parkashan, Bhadoriya Complex, Lucknow (2005)
    • اشاعت : 2005

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY