کیا اذیت ہے مرد ہونے کی

پارس مزاری

کیا اذیت ہے مرد ہونے کی

پارس مزاری

MORE BYپارس مزاری

    کیا اذیت ہے مرد ہونے کی

    کوئی بھی جا نہیں ہے رونے کی

    دائرہ قید کی علامت ہے

    چاہے انگوٹھی پہنو سونے کی

    سانس پھونکی گئی بڑا احسان

    چابی بھر دی گئی کھلونے کی

    ایسی سردی میں شرط چادر ہے

    اوڑھنے کی ہو یا بچھونے کی

    بوجھ جیسا تھا جس کا تھا مجھے کیا

    مجھے اجرت ملی ہے ڈھونے کی

    میں جزیرے ڈبونے والا ہوں

    خو نہیں کشتیاں ڈبونے کی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY