کیا کہوں تم سے میں کہ کیا ہے عشق

میر تقی میر

کیا کہوں تم سے میں کہ کیا ہے عشق

میر تقی میر

MORE BYمیر تقی میر

    کیا کہوں تم سے میں کہ کیا ہے عشق

    جان کا روگ ہے بلا ہے عشق

    عشق ہی عشق ہے جہاں دیکھو

    سارے عالم میں بھر رہا ہے عشق

    عشق ہے طرز و طور عشق کے تئیں

    کہیں بندہ کہیں خدا ہے عشق

    عشق معشوق عشق عاشق ہے

    یعنی اپنا ہی مبتلا ہے عشق

    گر پرستش خدا کی ثابت کی

    کسو صورت میں ہو بھلا ہے عشق

    دل کش ایسا کہاں ہے دشمن جاں

    مدعی ہے پہ مدعا ہے عشق

    ہے ہمارے بھی طور کا عاشق

    جس کسی کو کہیں ہوا ہے عشق

    کوئی خواہاں نہیں محبت کا

    تو کہے جنس ناروا ہے عشق

    میرؔ جی زرد ہوتے جاتے ہو

    کیا کہیں تم نے بھی کیا ہے عشق

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    مہران امروہی

    مہران امروہی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY