لفظ و منظر میں معانی کو ٹٹولا نہ کرو

محمود ایاز

لفظ و منظر میں معانی کو ٹٹولا نہ کرو

محمود ایاز

MORE BYمحمود ایاز

    لفظ و منظر میں معانی کو ٹٹولا نہ کرو

    ہوش والے ہو تو ہر بات کو سمجھا نہ کرو

    وہ نہیں ہے نہ سہی ترک تمنا نہ کرو

    دل اکیلا ہے اسے اور اکیلا نہ کرو

    بند آنکھوں میں ہیں نادیدہ زمانے پیدا

    کھلی آنکھوں ہی سے ہر چیز کو دیکھا نہ کرو

    دن تو ہنگامۂ ہستی میں گزر جائے گا

    صبح تک شام کو افسانہ در افسانہ کرو

    مآخذ:

    • کتاب : naqsh-e-bar aab (Pg. 84)
    • Author : mahmood ayaaz
    • مطبع : Modern Publishing House, Darya Ganj new delhi (2001)
    • اشاعت : 2001

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY