لہو نہ ہو تو قلم ترجماں نہیں ہوتا

وسیم بریلوی

لہو نہ ہو تو قلم ترجماں نہیں ہوتا

وسیم بریلوی

MORE BYوسیم بریلوی

    لہو نہ ہو تو قلم ترجماں نہیں ہوتا

    ہمارے دور میں آنسو زباں نہیں ہوتا

    جہاں رہے گا وہیں روشنی لٹائے گا

    کسی چراغ کا اپنا مکاں نہیں ہوتا

    یہ کس مقام پہ لائی ہے میری تنہائی

    کہ مجھ سے آج کوئی بد گماں نہیں ہوتا

    بس اک نگاہ مری راہ دیکھتی ہوتی

    یہ سارا شہر مرا میزباں نہیں ہوتا

    ترا خیال نہ ہوتا تو کون سمجھاتا

    زمیں نہ ہو تو کوئی آسماں نہیں ہوتا

    میں اس کو بھول گیا ہوں یہ کون مانے گا

    کسی چراغ کے بس میں دھواں نہیں ہوتا

    وسیمؔ صدیوں کی آنکھوں سے دیکھیے مجھ کو

    وہ لفظ ہوں جو کبھی داستاں نہیں ہوتا

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    نامعلوم

    نامعلوم

    Tagged Under

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY