مار ڈالا مسکرا کر ناز سے

جلیل مانک پوری

مار ڈالا مسکرا کر ناز سے

جلیل مانک پوری

MORE BYجلیل مانک پوری

    مار ڈالا مسکرا کر ناز سے

    ہاں مری جاں پھر اسی انداز سے

    کس نے کہہ دی ان سے میری داستاں

    چونک چونک اٹھتے ہیں خواب ناز سے

    پھر وہی وہ تھے وہاں کچھ بھی نہ تھا

    جس طرف دیکھا نگاہ ناز سے

    درد دل پہلے تو وہ سنتے نہ تھے

    اب یہ کہتے ہیں ذرا آواز سے

    مٹ گئے شکوے جب اس نے اے جلیلؔ

    ڈال دیں بانہیں گلے میں ناز سے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY