مجھ پہ ہیں سیکڑوں الزام مرے ساتھ نہ چل

شکیل اعظمی

مجھ پہ ہیں سیکڑوں الزام مرے ساتھ نہ چل

شکیل اعظمی

MORE BYشکیل اعظمی

    مجھ پہ ہیں سیکڑوں الزام مرے ساتھ نہ چل

    تو بھی ہو جائے گا بدنام مرے ساتھ نہ چل

    تو نئی صبح کے سورج کی ہے اجلی سی کرن

    میں ہوں اک دھول بھری شام مرے ساتھ نہ چل

    اپنی خوشیاں مرے آلام سے منسوب نہ کر

    مجھ سے مت مانگ مرا نام مرے ساتھ نہ چل

    تو بھی کھو جائے گی ٹپکے ہوئے آنسو کی طرح

    دیکھ اے گردش ایام مرے ساتھ نہ چل

    میری دیوار کو تو کتنا سنبھالے گا شکیلؔ

    ٹوٹتا رہتا ہوں ہر گام مرے ساتھ نہ چل

    مأخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY