جب ہوا عرفاں تو غم آرام جاں بنتا گیا

مجروح سلطانپوری

جب ہوا عرفاں تو غم آرام جاں بنتا گیا

مجروح سلطانپوری

MORE BYمجروح سلطانپوری

    جب ہوا عرفاں تو غم آرام جاں بنتا گیا

    سوز جاناں دل میں سوز دیگراں بنتا گیا

    رفتہ رفتہ منقلب ہوتی گئی رسم چمن

    دھیرے دھیرے نغمۂ دل بھی فغاں بنتا گیا

    میں اکیلا ہی چلا تھا جانب منزل مگر

    لوگ ساتھ آتے گئے اور کارواں بنتا گیا

    میں تو جب جانوں کہ بھر دے ساغر ہر خاص و عام

    یوں تو جو آیا وہی پیر مغاں بنتا گیا

    جس طرف بھی چل پڑے ہم آبلہ پایان شوق

    خار سے گل اور گل سے گلستاں بنتا گیا

    شرح غم تو مختصر ہوتی گئی اس کے حضور

    لفظ جو منہ سے نہ نکلا داستاں بنتا گیا

    دہر میں مجروحؔ کوئی جاوداں مضموں کہاں

    میں جسے چھوتا گیا وہ جاوداں بنتا گیا

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    مجروح سلطانپوری

    مجروح سلطانپوری

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    شکیل جمالی

    شکیل جمالی

    نعمان شوق

    جب ہوا عرفاں تو غم آرام جاں بنتا گیا نعمان شوق

    موضوعات:

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY