مفلسی سب بہار کھوتی ہے

ولی محمد ولی

مفلسی سب بہار کھوتی ہے

ولی محمد ولی

MORE BYولی محمد ولی

    مفلسی سب بہار کھوتی ہے

    مرد کا اعتبار کھوتی ہے

    کیونکے حاصل ہو مج کو جمعیت

    زلف تیری قرار کھوتی ہے

    ہر سحر شوخ کی نگہ کی شراب

    مجھ انکھاں کا خمار کھوتی ہے

    کیونکے ملنا صنم کا ترک کروں

    دلبری اختیار کھوتی ہے

    اے ولیؔ آب اس پری رو کی

    مجھ سنے کا غبار کھوتی ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY