پہلے نہائی اوس میں پھر آنسوؤں میں رات

شہریار

پہلے نہائی اوس میں پھر آنسوؤں میں رات

شہریار

MORE BY شہریار

    پہلے نہائی اوس میں پھر آنسوؤں میں رات

    یوں بوند بوند اتری ہمارے گھروں میں رات

    کچھ بھی دکھائی دیتا نہیں دور دور تک

    چبھتی ہے سوئیوں کی طرح جب رگوں میں رات

    وہ کھردری چٹانیں وہ دریا وہ آبشار

    سب کچھ سمیٹ لے گئی اپنے پروں میں رات

    آنکھوں کو سب کی نیند بھی دی خواب بھی دیے

    ہم کو شمار کرتی رہی دشمنوں میں رات

    بے سمت منزلوں نے بلایا ہے پھر ہمیں

    سناٹے پھر بچھانے لگی راستوں میں رات

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    پہلے نہائی اوس میں پھر آنسوؤں میں رات نعمان شوق

    Tagged Under

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites