راہ حق میں تجھے ہستی کو مٹانا ہوگا

محمد علی ساحل

راہ حق میں تجھے ہستی کو مٹانا ہوگا

محمد علی ساحل

MORE BY محمد علی ساحل

    راہ حق میں تجھے ہستی کو مٹانا ہوگا

    دیکھنا پھر تری ٹھوکر میں زمانہ ہوگا

    رونے والے تجھے ہنستے ہوئے پھولوں کی طرح

    ساری دنیا کو ہنر اپنا دکھانا ہوگا

    بے وفا ہو کے بھی تو اتنی مقدس کیوں ہے

    زندگی آج تجھے راز بتانا ہوگا

    وقت رخصت یہی کہتی تھیں برستی آنکھیں

    پاس میرے تجھے پھر لوٹ کے آنا ہوگا

    ایک چنگاری تعصب کی نظر آئی ہے

    دیکھنا یہ ہے کہاں اس کا نشانہ ہوگا

    اپنے ماضی کے ہر اک غم کو بھلا دے ورنہ

    چوٹ پھر ابھرے گی پھر درد پرانا ہوگا

    خامشی تیری مری جان لیے لیتی ہے

    اپنی تصویر سے باہر تجھے آنا ہوگا

    زندگی میں تجھے چلنا ہے سنبھل کر ساحلؔ

    راستے میں ترے کم ظرف زمانہ ہوگا

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    محمد علی ساحل

    محمد علی ساحل

    مآخذ:

    • کتاب : Kirdaar (Pg. 31)
    • Author : Mohammed Ali Sahil
    • مطبع : Voice Publication (2014)
    • اشاعت : 2014

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY