راستہ بھول گیا ایک ستارہ اپنا

اقبال اشہر

راستہ بھول گیا ایک ستارہ اپنا

اقبال اشہر

MORE BYاقبال اشہر

    راستہ بھول گیا ایک ستارہ اپنا

    چاند نے بند کیا جب سے دریچہ اپنا

    روز آئینہ دکھاتی ہے زمانے بھر کو

    زندگی دیکھ لے تو بھی کبھی چہرہ اپنا

    عکس تیرا کبھی اوجھل ہو اگر منظر سے

    آئینہ ڈھونڈھتا رہ جائے اجالا اپنا

    سوچتا ہوں تری تصویر دکھا دوں اس کو

    روشنی نے کبھی سایہ نہیں دیکھا اپنا

    یہ سلگتا ہوا صحرا ہے نشانی اس کی

    راستہ بھول گیا تھا کوئی دریا اپنا

    مآخذ :
    • کتاب : Rat jage (Pg. 62)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY