سر اٹھانے کی تو ہمت نہیں کرنے والے

نادم ندیم

سر اٹھانے کی تو ہمت نہیں کرنے والے

نادم ندیم

MORE BY نادم ندیم

    سر اٹھانے کی تو ہمت نہیں کرنے والے

    یہ جو مردہ ہیں بغاوت نہیں کرنے والے

    مفلسی لاکھ سہی ہم میں وہ خودداری ہے

    حاکم وقت کی خدمت نہیں کرنے والے

    ان سے امید نہ رکھ ہیں یہ سیاست والے

    یہ کسی سے بھی محبت نہیں کرنے والے

    ہاتھ آندھی سے ملا آئے اسی دور کے لوگ

    یہ چراغوں کی حفاظت نہیں کرنے والے

    عشق ہم کو یہ نبھانا ہے تو جو رکھ شرطیں

    ہم کسی شرط پہ حجت نہیں کرنے والے

    پھوڑ کر سر ترے در پر یہیں مر جائیں گے

    ہم ترے شہر سے ہجرت نہیں کرنے والے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY