ستم کرو نہ کرو اختیار باقی ہے

مبارک عظیم آبادی

ستم کرو نہ کرو اختیار باقی ہے

مبارک عظیم آبادی

MORE BY مبارک عظیم آبادی

    ستم کرو نہ کرو اختیار باقی ہے

    جو ہم نہیں تو ہمارا مزار باقی ہے

    گئی بہار مگر اپنی بے خودی ہے وہی

    سمجھ رہا ہوں کہ اب تک بہار باقی ہے

    ہزار مرحلۂ انتظار طے بھی ہوئے

    ہزار مرحلۂ انتظار باقی ہے

    شکست توبہ ہے ایسی ثواب میں داخل

    ابھی سے توبہ مبارکؔ بہار باقی ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY