تمام عمر کی آوارگی پہ بھاری ہے

شبنم رومانی

تمام عمر کی آوارگی پہ بھاری ہے

شبنم رومانی

MORE BY شبنم رومانی

    تمام عمر کی آوارگی پہ بھاری ہے

    وہ ایک شب جو تری یاد میں گزاری ہے

    سنا رہا ہوں بڑی سادگی سے پیار کے گیت

    مگر یہاں تو عبادت بھی کاروباری ہے

    نگاہ شوق نے مجھ کو یہ راز سمجھایا

    حیا بھی دل کی نزاکت پہ ضرب کاری ہے

    مجھے یہ زعم کہ میں حسن کا مصور ہوں

    انہیں یہ ناز کہ تصویر تو ہماری ہے

    یہ کس نے چھیڑ دیا رخصت بہار کا گیت

    ابھی تو رقص نسیم بہار جاری ہے

    خفا نہ ہو تو دکھا دیں ہم آئنہ تم کو

    ہمیں قبول کہ ساری خطا ہماری ہے

    جہاں پناہ محبت جناب شبنمؔ ہیں

    زبان شعر میں فرمان شوق جاری ہے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    شبنم رومانی

    شبنم رومانی

    مآخذ:

    • کتاب : Mujalla Dastavez (Pg. 401)
    • Author : Aziz Nabeel
    • مطبع : Edarah Dastavez (2010)
    • اشاعت : 2010

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY