مرا جی ہے جب تک تری جستجو ہے

خواجہ میر درد

مرا جی ہے جب تک تری جستجو ہے

خواجہ میر درد

MORE BYخواجہ میر درد

    مرا جی ہے جب تک تری جستجو ہے

    زباں جب تلک ہے یہی گفتگو ہے

    خدا جانے کیا ہوگا انجام اس کا

    میں بے صبر اتنا ہوں وہ تند خو ہے

    تمنا تری ہے اگر ہے تمنا

    تری آرزو ہے اگر آرزو ہے

    کیا سیر سب ہم نے گلزار دنیا

    گل دوستی میں عجب رنگ و بو ہے

    غنیمت ہے یہ دید و دید یاراں

    جہاں آنکھ مند گئی نہ میں ہوں نہ تو ہے

    نظر میرے دل کی پڑی دردؔ کس پر

    جدھر دیکھتا ہوں وہی رو بہ رو ہے

    موضوعات :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY