ترا وصل ہے مجھے بے خودی ترا ہجر ہے مجھے آگہی (ردیف .. ے)

جلال الدین اکبر

ترا وصل ہے مجھے بے خودی ترا ہجر ہے مجھے آگہی (ردیف .. ے)

جلال الدین اکبر

MORE BY جلال الدین اکبر

    ترا وصل ہے مجھے بے خودی ترا ہجر ہے مجھے آگہی

    ترا وصل مجھ کو فراق ہے ترا ہجر مجھ کو وصال ہے

    میں ہوں در پر اس کے پڑا ہوا مجھے اور چاہیئے کیا بھلا

    مجھے بے پری کا ہو کیا گلا مری بے پری پر و بال ہے

    وہی میں ہوں اور وہی زندگی وہی صبح و شام کی سر خوشی

    وہی میرا حسن خیال ہے وہی ان کی شان جمال ہے

    مآخذ:

    • کتاب : Jadeed Shora-e-Urdu (Pg. 946)
    • Author : Dr. Abdul Wahid
    • مطبع : Feroz sons Printers Publishers and Stationers

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY