تری باتوں میں چکنائی بہت ہے

عزیز احمد

تری باتوں میں چکنائی بہت ہے

عزیز احمد

MORE BY عزیز احمد

    تری باتوں میں چکنائی بہت ہے

    کہ کم ہے دودھ بالائی بہت ہے

    پولس کیوں آپ منگوانے لگے ہیں

    مجھے تو آپ کا بھائی بہت ہے

    محبت کیوں محلے بھر سے کر لیں

    ہمیں تو ایک ہمسائی بہت ہے

    وہ محبوبہ سے بیوی بن نہ جائے

    مری ماں کو پسند آئی بہت ہے

    نشہ ٹوٹا نہیں ہے مار کھا کر

    کہ ہم نے پی ہے کم کھائی بہت ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY