تجھے کون جانتا تھا مری دوستی سے پہلے

کیف بھوپالی

تجھے کون جانتا تھا مری دوستی سے پہلے

کیف بھوپالی

MORE BY کیف بھوپالی

    تجھے کون جانتا تھا مری دوستی سے پہلے

    ترا حسن کچھ نہیں تھا مری شاعری سے پہلے

    ادھر آ رقیب میرے میں تجھے گلے لگا لوں

    مرا عشق بے مزا تھا تری دشمنی سے پہلے

    کئی انقلاب آئے کئی خوش خرام گزرے

    نہ اٹھی مگر قیامت تری کم سنی سے پہلے

    مری صبح کے ستارے تجھے ڈھونڈتی ہیں آنکھیں

    کہیں رات ڈس نہ جائے تری روشنی سے پہلے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY