تمہارا ہجر منا لوں اگر اجازت ہو

جون ایلیا

تمہارا ہجر منا لوں اگر اجازت ہو

جون ایلیا

MORE BY جون ایلیا

    تمہارا ہجر منا لوں اگر اجازت ہو

    میں دل کسی سے لگا لوں اگر اجازت ہو

    تمہارے بعد بھلا کیا ہیں وعدہ و پیماں

    بس اپنا وقت گنوا لوں اگر اجازت ہو

    تمہارے ہجر کی شب ہائے کار میں جاناں

    کوئی چراغ جلا لوں اگر اجازت ہو

    جنوں وہی ہے وہی میں مگر ہے شہر نیا

    یہاں بھی شور مچا لوں اگر اجازت ہو

    کسے ہے خواہش مرہم گری مگر پھر بھی

    میں اپنے زخم دکھا لوں اگر اجازت ہو

    تمہاری یاد میں جینے کی آرزو ہے ابھی

    کچھ اپنا حال سنبھالوں اگر اجازت ہو

    مآخذ:

    • کتاب : gumaan (Pg. 49)

    Tagged Under

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY