تمہارے شہر کا موسم بڑا سہانا لگے

قیصر الجعفری

تمہارے شہر کا موسم بڑا سہانا لگے

قیصر الجعفری

MORE BY قیصر الجعفری

    تمہارے شہر کا موسم بڑا سہانا لگے

    میں ایک شام چرا لوں اگر برا نہ لگے

    تمہارے بس میں اگر ہو تو بھول جاؤ مجھے

    تمہیں بھلانے میں شاید مجھے زمانہ لگے

    جو ڈوبنا ہے تو اتنے سکون سے ڈوبو

    کہ آس پاس کی لہروں کو بھی پتا نہ لگے

    وہ پھول جو مرے دامن سے ہو گئے منسوب

    خدا کرے انہیں بازار کی ہوا نہ لگے

    نہ جانے کیا ہے کسی کی اداس آنکھوں میں

    وہ منہ چھپا کے بھی جائے تو بے وفا نہ لگے

    تو اس طرح سے مرے ساتھ بے وفائی کر

    کہ تیرے بعد مجھے کوئی بے وفا نہ لگے

    تم آنکھ موند کے پی جاؤ زندگی قیصرؔ

    کہ ایک گھونٹ میں ممکن ہے بد مزہ نہ لگے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    منی بیگم

    منی بیگم

    گلشن آرا سید

    گلشن آرا سید

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY