واقعہ کوئی نہ جنت میں ہوا میرے بعد

شہزاد احمد

واقعہ کوئی نہ جنت میں ہوا میرے بعد

شہزاد احمد

MORE BYشہزاد احمد

    واقعہ کوئی نہ جنت میں ہوا میرے بعد

    آسمانوں پہ اکیلا ہے خدا میرے بعد

    پھر دکھاتا ہے مجھے جنت فردوس کے خواب

    کیا فرشتوں میں ترا جی نہ لگا میرے بعد

    کچھ نہیں ہے تری دنیا میں ہیولوں کے سوا

    مجھ سے پہلے بھی وہی تھا جو ہوا میرے بعد

    خاک صحرائے جنوں نرم ہے ریشم کی طرح

    آبلہ ہے نہ کوئی آبلہ پا میرے بعد

    میرے انجام پہ ہنسنے کی تمنا نہ کرو

    کم ہی بدلے گی گلستاں کی ہوا میرے بعد

    ختم افسانہ ہوا بات سمجھ میں آئی

    ساری دنیا نے مجھے جان لیا میرے بعد

    یار ہوتے تو مجھے منہ پہ برا کہہ دیتے

    بزم میں میرا گلا سب نے کیا میرے بعد

    ہوں پر کاہ شب و روز مگر سوچتا ہوں

    کس کے گھر جائے گا سیلاب بلا میرے بعد

    اس زمیں میں وہ کوئی اور غزل بھی کہتا

    لیکن افسوس کہ غالبؔ نہ ہوا میرے بعد

    مأخذ :
    • کتاب : Deewar pe dastak (Pg. 330)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY