محنت کرو

MORE BYمحمد حسین آزاد

    ہے امتحاں سر پر کھڑا محنت کرو محنت کرو

    باندھو کمر بیٹھے ہو کیا محنت کرو محنت کرو

    بے شک پڑھائی ہے سوا اور وقت ہے تھوڑا رہا

    ہے ایسی مشکل بات کیا محنت کرو محنت کرو

    شکوے شکایت جو کہ تھے تم نے کہے ہم نے سنے

    جو کچھ ہوا اچھا ہوا محنت کرو محنت کرو

    محنت کرو انعام لو انعام پر اکرام لو

    جو چاہو گے مل جائے گا محنت کرو محنت کرو

    جو بیٹھ جائیں ہار کر کہہ دو انہیں للکار کر

    ہمت کا کوڑا مار کر محنت کرو محنت کرو

    تدبیریں ساری کر چکے باتوں کے دریا بہہ چکے

    بک بک سے اب کیا فائدہ محنت کرو محنت کرو

    یہ بیج اگر ڈالوگے تم دل سے اسے پا لو گے تم

    دیکھو گے پھر اس کا مزا محنت کرو محنت کرو

    محنت جو کی جی توڑ کر ہر شوق سے منہ موڑ کر

    کر دو گے دم میں فیصلہ محنت کرو محنت کرو

    کھیتی ہو یا سوداگری ہو بھیک ہو یا چاکری

    سب کا سبق یکساں سنا محنت کرو محنت کرو

    جس دن بڑے تم ہو گئے دنیا کے دھندوں میں پھنسے

    پڑھنے کی پھر فرصت کجا محنت کرو محنت کرو

    بچپن رہا کس کا بھلا انجام کو سوچو ذرا

    یہ تو کہو کھاؤ گے کیا محنت کرو محنت کرو

    مأخذ :
    • کتاب : Hamari Qaumi Shaeri (Pg. 270)
    • Author : Ali Jawad Zaidi
    • مطبع : Uttar Pradesh Urdu Acadmi (Lucknow) (1998)
    • اشاعت : 1998

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY