نوالا

MORE BYعلی سردار جعفری

    ماں ہے ریشم کے کارخانے میں

    باپ مصروف سوتی مل میں ہے

    کوکھ سے ماں کی جب سے نکلا ہے

    بچہ کھولی کے کالے دل میں ہے

    جب یہاں سے نکل کے جائے گا

    کارخانوں کے کام آئے گا

    اپنے مجبور پیٹ کی خاطر

    بھوک سرمائے کی بڑھائے گا

    ہاتھ سونے کے پھول اگلیں گے

    جسم چاندی کا دھن لٹائے گا

    کھڑکیاں ہوں گی بینک کی روشن

    خون اس کا دئیے جلائے گا

    یہ جو ننھا ہے بھولا بھالا ہے

    صرف سرمائے کا نوالا ہے

    پوچھتی ہے یہ اس کی خاموشی

    کوئی مجھ کو بچانے والا ہے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    علی سردار جعفری

    علی سردار جعفری

    علی سردار جعفری

    علی سردار جعفری

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نوالا نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY