چوہا

MORE BYاحمد آزاد

    ایک بوسے نے

    تمہیں عورت بنا دیا

    اور اسے تبدیل کر دیا

    ایک چوہے میں

    یہ چوہا

    بلیوں کو دیکھ کر

    ڈرا سہما

    شہر کی گلیوں میں

    گھس جاتا ہے

    ڈھونڈتا رہتا ہے دن بھر

    اپنی وحشت کا سرا

    مباشرت کی جگہ

    آوارہ گردی کرتا ہے

    ان سے کہہ دو

    اپنے جسم کو دکھانے کا

    سوانگ نہ رچائیں

    چوہا سوچتا ہے

    پاگل آنکھیں

    ان کے بدن کے کسی بھی حصے میں

    داخل ہو سکتی ہیں

    موضوعات :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY