کیا عشق ایک زندگئ مستعار کا (ردیف .. و)

علامہ اقبال

کیا عشق ایک زندگئ مستعار کا (ردیف .. و)

علامہ اقبال

MORE BYعلامہ اقبال

    کیا عشق ایک زندگئ مستعار کا

    کیا عشق پائیدار سے ناپائیدار کا

    وہ عشق جس کی شمع بجھا دے اجل کی پھونک

    اس میں مزہ نہیں تپش و انتظار کا

    میری بساط کیا ہے تب و تاب یک نفس

    شعلہ سے بے محل ہے الجھنا شرار کا

    کر پہلے مجھ کو زندگیٔ جاوداں عطا

    پھر ذوق و شوق دیکھ دل بے قرار کا

    کانٹا وہ دے کہ جس کی کھٹک لا زوال ہو

    یارب وہ درد جس کی کسک لا زوال ہو

    موضوعات :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY