Hamid Mukhtar Hamid's Photo'

حامد مختار حامد

مظفر نگر, ہندوستان

حامد مختار حامد

غزل 7

اشعار 8

یہ جفاؤں کی سزا ہے کہ تماشائی ہے تو

یہ وفاؤں کی سزا ہے کہ پئے دار ہوں میں

آج کا خط ہی اسے بھیجا ہے کورا لیکن

آج کا خط ہی ادھورا نہیں لکھا میں نے

عمر ہی تیری گزر جائے گی ان کے حل میں

تیرا بچہ جو سوالات لیے بیٹھا ہے

تو ہنسی لے کے مری آنکھ کو آنسو دے دے

مجھ سے سوکھا ہوا دریا نہیں دیکھا جاتا

یہ بزرگوں کی روا داری کے پژمردہ گلاب

آبیاری چاہتے ہیں ان میں چنگاری نہ رکھ

"مظفر نگر" کے مزید شعرا

  • لکی فاروقی حسرت لکی فاروقی حسرت
  • عین عرفان عین عرفان
  • طارق عثمانی طارق عثمانی
  • مظفر رزمی مظفر رزمی
  • ایاز احمد طالب ایاز احمد طالب
  • نوید انجم نوید انجم
  • احتشام الحق صدیقی احتشام الحق صدیقی
  • محمد امیر اعظم قریشی محمد امیر اعظم قریشی
  • آس فاطمی آس فاطمی
  • اشوک ساحل اشوک ساحل